Islamic Education

All About Islam

سورة الناس

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedinmailFacebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedinmail

 

ناس کا مطلب

 

ناس کا لفظی مطلب ہے انسان۔

سورة الناس کا ترجمہ

 

کہہ دو کہ میں اللہ کی پناہ میں آتا ہوں

لوگوں کے مالک کی

لوگوں کے معبود کی

اس سے جو وسوسے ڈال کر چھپ جاتا ہے

جو لوگوں کے دلوں میں وسوسہ ڈالتا ہے

چاہے وہ جنوں میں سے ہو یا انسانوں میں سے

سورة الناس کی وضاحت 

سورت ناس اور سورت فلق اللہ نے تب اتاری تھیں جب پیارے نبی کریم پر کسی نے جادو کیا تھ؛. اس سورت میں اللہ نے مسلمانوں کو شیطان کو وسوسوں، واہمات، جنوں کے شر اور انسانوں کی شیطانیوں سے بچاو کے لئے پناہ مانگنا سکھایا ہے

اس سورت میں لفظ وسواسل سے مراد ہے ششیطا کے وسوسے جو وہ دن رات انسان کے دل و دماغ میں ڈالتا رہتا ہے. تو اللہ انسان کو ان وسوسوں سے بچنے کی تلقین کرتا ہے اور اس کی دعا سکھاتا ہے

سورة الناس کا نزول

سورت الناس قرآن کی 114 سورت ہے. اس کی 6 آیات ہیں. یہ قرآن کی آخری سورت ہے اور اس کا نزول مکہ میں ہوا تھا اس لئے اسے مکی سورت کہتے ہیں

سورة الناس کا مقصد  

سورت الناس کا  مقصد انسان کو ایسی دعا سکھانا ہے جس کے ذریعے انسان اللہ سے اپنی حفاظت کی دعا کرتا ہے

سورة الناس کے فوائد

 سورة الناس کا ورد انسان کو بہت سی چیزوں سے محفوظ رکھتا ہے جیسے

جنات

شیطان کے وسوسوں

انسانوں کو شر

سے حفاظت

 

اگر اس مکالمے میں ہم سے کوئی غلطی یا کوتاہی ہوئی ہے تو براہ مہربانی غلطی کی نشاندہی کر کے ہماری اصلاح میں مدد کیجیئے۔ اللہ ہماری چھوٹی بڑی غلطیوں کو معاف فرمائے اور ہماری اس کاوش کو اپنی بارگاہ میں قبول و مقبول فرمائے۔اللہ اس کاوش کو ہمارے خاندان کے لئے نجات کا موجب بنائے اور دین پر ہماری پکڑ کو اور مضبوط کرے. آمین

Next Post

Previous Post

Leave a Reply

© 2019 Islamic Education

Theme by Anders Norén